فرانسیسی صدر کے منہ پر تھپڑ رسید کرنے والا شخص کون ہے ؟


تلوار بازی کے شوقین 28 سالہ نوجوان سے تفتیش جاری ہے، فوٹو: فائل

تلوار بازی کے شوقین 28 سالہ نوجوان سے تفتیش جاری ہے، فوٹو: فائل

پیرس: متنازع بیانات کے باعث شہرت رکھنے والے فرانسیسی صدر ایمانوئیل میکرون کے منہ پر زوردار تھپڑ رسید کرنے والے نوجوان کی شناخت ہوگئی۔ 

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق گزشتہ روز فرانس کے صدر ایمانوئیل میکرون وبا کے بعد سماجی اور تجارتی سرگرمیوں کی بحالی کا جائزہ لینے ریسٹورینٹس کے مالکان اور طلبا سے ملاقات کے لیے شہر ڈروم پہنچے تھے جہاں ایک نوجوان نے سب کے سامنے صدر کے منہ پر تھپڑ جڑ دیا تھا۔

پولیس نے اچانک کی افتاد پر بوکھلاہٹ کے شکار ایمانوئیل میکرون کو نوجوان سے دور کیا اور دو افراد کو حراست میں لے لیا تھا تاہم تفتیشی ذرائع نے آج گرفتار نوجوان سے متعلق معلومات دی ہیں۔

عالمی خبر رساں ادارے نے تفتیشی ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ تھپڑ مارنے والا شخص 28 سالہ ڈامین تاریل ہے جو قرون وسطی کے دور کی تلوار بازی کا مداح ہے اور اس حوالے سے ایک کلب بھی چلاتا ہے۔

پولیس کا مزید کہنا ہے کہ تلوار چلانے کی تربیت دینے والے کلب کے مالک ڈامین تاریل کا مجرمانہ ریکارڈ موجود نہیں ہے۔ ڈامین نے تھپڑ رسید کرتے ہوئے میکرون کی پالیسیوں کے خلاف نعرے بازی کی تھی۔

مقامی پراسیکیوٹر کا کہنا ہے کہ ایک سرکاری عہدیدار کے خلاف حملے پر تفتیش جاری ہے۔ فرانس میں کسی سرکاری عہدیدار سے مار پیٹ پر تین سال قید اور 45 ہزار یورو کا جرمانہ ہوسکتا ہے۔





Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *