جنونی ہندوؤں نے گاؤ ماتا کی رکھشا کے نام پر مسلم نوجوان کو قتل کردیا


انتہا پسندوں نے 5 افراد کو زخمی بھی کردیا، فوٹو: فائل

انتہا پسندوں نے 5 افراد کو زخمی بھی کردیا، فوٹو: فائل

اترپردیش: بھارت میں انتہا پسند ہندوؤں نے گاؤ ماتا کی رکھشا کے نام پر ایک مسلمان نوجوان کو قتل جب کہ 5 کو شدید زخمی کردیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ریاست اتر پردیش کے علاقے علی گڑھ میں جنونی ہندوؤں نے مسلم خاندان پر حملہ کردیا۔ لاٹھیوں، ڈندوں اور تیز دھار آلے کے وار سے 6 افراد شدید زخمی ہوگئے۔

پولیس نے زخمیوں کو قریبی اسپتال منتقل کیا جہاں نوجوان شیرا نے زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ دیا جب کہ دیگر 5 بھی شدید زخمی حالت میں زیر علاج ہیں۔ پولیس کا کہنا ہے کہ حملہ آوروں نے مسلم خاندان پر گائے کی اسمگلنگ کا الزام عائد کیا ہے۔

پولیس نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ یہ دو گروہوں کی لڑائی تھی جسے مذہبی رنگ دیا گیا۔ پولیس نے مسلم خاندان پر حملہ کرنے کے الزام میں ایک ہندو پجاری کو حراست میں لیا ہے۔ سوشل میڈیا پر ہندو پجاری کی اقبالِ جرم کی ویڈیو بھی سامنے آئی ہے۔





Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *